ملزمان آٹھویں جماعت کی طالبہ کوگھمانے کے بہانے ساتھ لے گئے، ایسا کام کردیا کہ۔۔۔

ایبٹ آباد (نیوز ڈیسک) ایبٹ آباد میں آٹھویں جماعت کی طالبہ کو مبینہ طور پر زیادتی کا نشانہ بنا دیا گیا۔پولیس نے مرکزی ملزم کو ساتھیوں سمیت گرفتار کر لیا ہے۔پولیس کا کہنا ہے کہ دو روز قبل ملزمان نے آٹھویں جماعت کی طالبہ کو گھمانے لے جانے کا بہانا بنایا اور ٹھنڈیانی روڈ پر گاڑی کے اندر زیادتی کا نشانہ بنا دیا گیا۔پولیس کا کہنا ہے کہ 8 جون کو واقعہ رونما ہوا جس کے بعد مقدمہ تھانہ نواں شہر میں 10 جون کو درج کرایا گیا جبکہ متاثرہ لڑکی دھمتوڑ کی رہائشی ہے۔پولیس نے مقدمہ درج کرکے کارروائی کا آغاز کر دیا ہے۔ڈی ایس پی میرپور کے مطابق واقعے کے

مرکزی ملزم کو ساتھیوں اور جائے وقوعہ پر استعمال کی گئی گاڑی سمیت گرفتار کر لیا گیا ہے۔ متاثرہ لڑکی کے طبی معائنے میں ریپ کی تصدیق ہوئی ہے جبکہ پولیس نے ملزم کے ڈی این اے سیمپل اکٹھا کر کے لیبارٹری بھجوا دئیے ہیں۔دوسری جانب گجرات میں ذہنی معذور لڑکی سے مبینہ طور پر زیادتی کرنے والے شخص کو پولیس نے گرفتار کرلیا۔ضلع گجرات میں ایک شخص نے مبینہ طور پر ذہنی معذور لڑکی کو زیادتی کا نشانہ بنایا، جس کے بعد اہل خانہ نے متعلقہ تھانے میں واقعے کے خلاف متعلقہ تھانے میں درخواست دائر کی۔ڈائریکٹر جنرل پولیس (ڈی پی او) کے مطابق گجرات میں پیش آنے والے افسوسناک واقعے میں ملوث ملزم کو گرفتار کرلیا گیا ۔ڈی پی او نے بتایا کہ ملزم ذہنی معذور لڑکی کو زیادتی کا نشانہ بنا رہا تھا کہ اسی دوران اس کا بھائی جائے وقوعہ پر پہنچ گیا، جس کو دیکھ کر ملزم فرار ہوگیا تھا۔پولیس کے مطابق متاثرہ اہل خانہ کی درخواست کے بعد پولیس نے مفرور ملزم کی تلاش شروع کی جس کے بعد پولیس نے اسے گرفتار کرلیا۔ذرائع کے مطابق متاثرہ لڑکی کو میڈیکل کے لیے اسپتال منتقل کیا گیا ہے، جس کی رپورٹ آنے کے بعد درخواست پر مزید کارروائی کی جائے گی اور اسی بنیاد پر ملزم سے تفتیش کی جائے گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں