جہانگیرترین اور باقی ارکان پی ٹی آئی چھوڑ کر جارہے ہیں ؟شیخ رشید کا اہم بیان سامنے آگیا

کراچی (نیوز ڈیسک) وفاقی وزیرداخلہ شیخ رشید نے کہا ہے کہ جہانگیرترین اور باقی ارکان پی ٹی آئی کو چھوڑ کرکہیں نہیں جارہے، عمران خان کا بیانیہ ہر چور کا احتساب کرنا ہے، شہزاد اکبر کیخلاف منظم مہم چلائی جارہی ہے، عمران خان کا بیانیہ ہر چور کا احتساب کرنا ہے، پنجاب میں عثمان بزدار کا قلعہ مضبوط ہے۔ انہوں نے کراچی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ براڈشیٹ کمیشن کی رپورٹ پرسوئس اکاؤنٹس کھولنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، ایف آئی اے میں کئی سالوں سے براجمان لوگوں کو کسی اور جگہ بھیجا جائے گا، عمران خان نے کہا کہ بھارت سے چینی کپاس سمیت

ہر معاملے پر بات کشمیر ایشو حل ہونے پر ہوگی۔کراچی والوں کو زیادہ تر آٹا، چینی اور گھی کے معاملات کو شہزاد اکبر اور مہنگائی کو وزیراعظم خود دیکھ رہے ہیں۔عمران خان کی کوشش ہوگی کہ رمضان میں مہنگائی پر کنٹرول کریں گے۔ ہماری خوش نصیبی ہے ہمیں ایسی اپوزیشن ملی ہے، اپوزیشن خود جوتیوں میں دال بانٹ رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کا بیانیہ ہے کہ ہر چور کا احتساب ہوگا، عمران خان چوکیدار کا کردار ادا کرے گا، عمران خان کا بیانیہ نہیں پیٹا، اسجد ملہی نے جتنے ووٹ لیے یہ ثبوت ہے عمران خان کا بیانیہ زندہ ہے، ڈسکہ الیکشن ایسا ہے جو 50دنوں میں دوبار ہوا ہے، 12ہزار ووٹوں سے ہاریں ہیں، تحریک انصاف ہار کر بھی جیت گئی ہے، کیونکہ جمہوریت جیتی ہے، جمہوریت کا فیصلہ قبول کرنا ہے۔لوگوں نے پہلے سے بھی زیادہ ووٹ دیے ہیں۔کراچی میں پریس کانفرنس کے دوران وزیر داخلہ شیخ رشید کا کہنا تھا کہ ڈسکہ الیکشن میں جمہوریت کی جیت ہوئی، حکومت ڈسکہ الیکشن ہار کر بھی جیتی ہے جب کہ پنجاب میں آئندہ الیکشن پی ٹی آئی اور (ن) لیگ کے درمیان ہوگا، پی ٹی آئی کی خوش نصیبی ہے کہ اسے نالائق اپوزیشن ملی، اپوزیشن جماعتیں آپس میں لڑائی جھگڑاکررہی ہیں جب کہ سوئس اکاؤنٹس کیسز دوبارہ کھولےجائیں گے۔وزیرداخلہ شیخ رشید نے کہا کہ شہزاد اکبر احتساب کے وزیر ہیں وہ چینی اسکینڈل اور منی لانڈرنگ سے متعلق معاملات کو دیکھ رہے ہیں، ایف آئی اے میرے ماتحت ہے مگر شہزاد اکبر جو کررہےہیں انہیں کرنے دیں، ان کے خلاف منظم

مہم چلائی جارہی ہے جب کہ جہانگیرترین کہیں نہیں جارہے۔وزیر داخلہ نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے تمام مافیا کو للکارا ہے اور ان کی کوشش ہے کہ لوٹ مار کرنے والوں پر نکیل لگائی جائے، عمران خان مہنگائی سے متعلق معاملات کو خود دیکھ رہےہیں جب کہ ماہ رمضان میں کوشش ہوگی کہ لوٹ مار کو کنٹرول کیاجائے۔

متعلقہ آرٹیکلز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button