اگر کوئی تشویش ہے تو وزیراعظم سے ملاقات کرلیں، جہانگیر ترین کو عمران خان سے ملاقات کا مشورہ دیدیا گیا

لاہور (نیوز ڈیسک) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ اگر جہانگیر ترین کو کوئی تشویش ہے تو وہ وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کریں۔ملتان میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ممبران قومی و صوبائی اسمبلی عمران خان کے فیصلے کے پابند ہیں، آزاد ممبران نے بیان حلفی جمع کروایا اور اسمبلی میں تحریک انصاف کے بینچ پر بیٹھا شروع کیا۔ایک سوال کے جواب میں شاہ محمود قریشی نے کہا کہ 17 شوگر ملز کو نوٹس ملے، ان میں صرف ایک جہانگیر ترین کی ہے۔اگر جہانگیر ترین کو کوئی تشویش ہے تو وہ وزیراعظم سے ملاقات کریں۔عمران خان خندہ پیشانی سے جہانگیر ترین کی ہر بات سنیں گے۔

وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ ہمارا کوئی ممبر کسی دوسری پارٹی میں نہیں جا رہا میرا ۔پیپلزپارٹی سے اختلاف ہوا تو میں نے اپنی سیٹ چھوڑی اور استعفی دیا۔خیال رہے کہ تحریک انصاف کے مرکزی سینئر رہنماء جہانگیرترین کے عشائیے میں 29 قومی و صوبائی اسمبلی کے ارکان نے شرکت کی، ان ارکان میں 8 ایم این ایز ، 2 صوبائی وزراء اور 4 صوبائی مشیر بھی شامل تھے، جہانگیر ترین نے ان ارکان کو اعتماد میں لینے کیلئے عشائیہ دیا تھا۔ سینئر رہنماء پی ٹی آئی جہانگیر ترین کے عشائیے میں 2 صوبائی وزرا اور 4 صوبائی مشیروں سمیت21 ارکان پنجاب اسمبلی نے شرکت کی۔جبکہ 8 ارکان قومی اسمبلی نے بھی شرکت کی۔ عشائیے میں شرکت کرنے والے ارکان قومی اسمبلی میں راجہ ریاض، سمیع گیلانی، سجاد وڑائچ ، سمن نعیم ، افتخار گوندل، عون چودھری، طاہر رندھاوا ، زوار وڑائچ ، نذیر بلوچ ،امین چودھری، خرم لغاری، اسلم بھروانہ ، نذیر چوہان ، آصف مجید ، بلال وڑائچ ،عمر آفتاب شریک ہوئے۔ عشائیے میں صوبائی مشیرعبدالحئی دستی ، امیر محمد خان ، رفاقت گیلانی ، فیصل جبوانہ، صوبائی وزیر ملک نعمان لنگڑیال اور صوبائی وزیر اجمل چیمہ نے بھی شرکت کی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں