آصف زرداری پر فرد جرم عائد، لیکن کس کیس میں؟پیپلزپارٹی میں کھلبلی مچ گئی

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)احتساب عدالت نے توشہ خانہ ریفرنس میں سابق صدر آصف علی زرداری، سابق وزیراعظم یوسف عبدالغنی مجید اور انورمجید پر فرد جرم عائد کر دی ہے جب کہ نواز شریف کو اشتہاری قرار دے دیا ہے۔احتساب عدالت کے جج اصغرعلی نے ریفرنسز کی سماعت کی۔ توشہ خانہ ریفرنس کی سماعت کے دوران جج نے کہا کہ پہلے نوازشریف کا کیس الگ کریں گے پھر دیگر ملزمان پر فرد جرم عائد کی جائے گی۔توشہ خانہ ریفرنس میں نواز شریف اشتہاری قرار دیا ہے۔ احتساب عدالت نے نواز شریف کے دائمی وارنٹ گرفتاری جاری کرتے ہوئے جائیدادوں کی تفصیلات طلب کر لی ہیں۔

جج نے کہا کہ 7روز میں نوازشریف کی منقولہ و غیر منقولہ جائیداد کی تفصیلات پیش کی جائیں۔ سابق وزیراعظم کی عدم پیشی پرجائیداد منجمد کردی جائی گی۔عدالت نے آصف علی زرداری، یوسف رضا گیلانی، عبدالغنی مجید اور انور مجید پر فرد جرم عائد کی۔ چاروں ملزمان نے عدالت میں صحت جرم سے انکار کردیا۔جج احتساب عدالت نے استفسار کیا کہ کیاملزمان صحت جرم سے انکار کر رہے ہیں؟ وکیل صفائی نے کہا کہ وزیراعظم کے پاس اختیار ہوتا ہے کہ سمری کی منظوری دے۔ نیب نے اختیارات کاغیر قانونی استعمال کرکے غلط ریفرنس بنایا۔سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی نے عدالت میں مؤقف اپنایا کہ میں نے کبھی رولز کے خلاف کوئی کام نہیں کیا، قانون کے مطابق جو سمری آئی اسے منظور کیا۔ اگر سمری غلط ہوتی تو وہ موو ہی نہ ہوتی۔جج اعظم خان نے ریمارکس دیے کہ ہم کیس کے میرٹ پر بات نہیں کر رہے کہ سمری کیسے آئی اور منظور ہوئی۔عدالت نے نواز شریف کی منقولہ اور غیر منقولہ جائیداد کی تفصیل7 دن میں طلب کرلی ہیں۔ عدالت ریمارکس دیئے کہ آئندہ سماعت پر نواز شریف کی عدم پیشی کی صورت میں جائیداد منجمد کر لی جائے گی۔عدالت نے توشہ خانہ ریفرنس میں نیب کے 3 گواہان کو طلب کرتے ہوئے سماعت 24 ستمبر تک ملتوی کردی۔آصف علی زرداری نے میگا منی لانڈرنگ ریفرنس کو خارج کرنے کی استدعا کی۔ عدالت نے استفسارکیا کہ کیا آپ درخواست پر دلائل کے لیے تیار نہیں ہیں؟ آصف زردای کے وکیل فاروق ایچ نائیک نے استدعا کی کہ درخواست پر دلائل کے لیے 17 ستمبر کی تاریخ مقرر کر دیں۔فرد جرم عائد کرنے کی کارروائی سے پہلے نئی درخواست آنے پر نیب پراسیکیوٹر نے اعتراض کیا تاہم عدالت نے کارروائی 17 ستمبر تک ملتوی کر دی۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.