پاکستان میں کورونا سے مزید 10افراد چل بسے، مجموعی تعداد 6 ہزار 231 ہو گئی

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)عالمی وبا کورونا وائرس کے باعث پاکستان میں مزید 10 افراد جان کی بازی ہار گئے ہیں اور مجموعی تعداد 6 ہزار 231 ہو گئی ہے۔نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کی جانب سے جاری کیے گئے تازہ اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک میں کورونا کے 586 نئے کیسز رپورٹ ہوئے اور مجموعی تعداد2 لاکھ 92 ہزار 174 ہو گئی ہے۔پاکستان میں تاحال کورونا کے 2 لاکھ 75 ہزار 317 مریض صحتیاب ہوچکے ہیں جب کہ ملک بھر میں کورونا ایکٹو کیسز کی تعداد 10 ہزار 626 رہ گئی ہے۔سندھ میں کورونا کیسز کی تعداد ایک لاکھ 27 ہزار 691 ہو گئی ہے۔

پنجاب 96 ہزار 57، خیبر پختونخوا 35 ہزار 602، اسلام آباد 15 ہزار 472، بلوچستان 12 ہزار 473، آزاد کشمیر 2 ہزار 241 اور گلگت میں میں کورونا کیسز کی تعداد 2 ہزار 638 ہے۔کورونا وائرس کے باعث پنجاب میں 2 ہزار 188 اور سندھ میں 2 ہزار 357 اموات ہوئی ہیں۔ خیبر پختونخوا ایک ہزار 246، اسلام آباد 175، بلوچستان 141، ‏گلگت بلتستان 63 اور آزاد کشمیر میں کورونا سے اموات کی تعداد 61 ہے۔گزشتہ روز ملک بھر میں کورونا کے 25 ہزار 537 ٹیسٹ کیے گئے۔ اسپتالوں میں کورونا وینٹی لیٹرزکی تعدادا یک ہزار920 ہے۔ ملک بھر میں 735 اسپتالوں میں کورونا مریضوں کے لیے سہولیات موجود ہیں اور اس وقت ایک ہزار 241 مریض اسپتالوں میں داخل ہیں۔ملک میں کورونا ٹیسٹنگ صلاحیت یومیہ 60 ہزار سے زائد ہوگئی ہے۔ اور 132 ٹیسٹنگ لیبارٹریز کام کر رہی ہیں۔ 30 شہروں میں ٹریس، ٹیسٹ اورقرنطینہ حکمت عملی موثر طریقے سے کام رہی ہے۔حکومت کے مطابق پاکستان میں کورونا وائرس کیسز کا گراف مسلسل نیچے آرہا ہے، لیکن کورونا کا خطرہ ابھی ٹلا نہیں ہے۔پاکستان میں کورونا کا پہلا کیس 26 فروری کو رجسٹرڈ ہوا اور ایک ہزاراموات 21 مئی تک ہوئیں۔ وزارت صحت کا کہنا ہے کہ کیسز میں اضافے کی رفتار کافی سست ہوچکی ہے لیکن پھر بھی احتیاط کی ضرورت ہے۔پاکستان میں کورونا وائرس کے اثرات تیزی سے کم ہو رہے ہیں اور اگست کے پہلے دس روز میں صرف چھ ہزار کیسز رپورٹ ہوئے جو کہ ماضی کی نسبت سب سے کم ہیں۔نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر(این سی او سی) کی جانب سے محرم الحرام میں کورونا کے دوبارہ پھیلاؤ کا انتباہ جاری کیا گیا ہے۔ حکام کا کہنا ہے کہ محرم الحرام کے دوران کورونا وائرس کے خلاف موثر اقدامات کے ذریعے عوام کے تحفظ اور فلاح وبہبود کو یقینی بنایا جائے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں