22 برس تک قدیم گاڑی میں دنیا گھومنے والا خاندان گھر پہنچ گیا

بیونس آئرس(نیوز ڈیسک) ارجنٹائن کا ایک جوڑا 1928 کی ماڈل کی کار میں دنیا کے 102 ممالک کا چکر لگاکر 22 سال بعد واپس اپنے گھر پہنچ گیا تاہم اس دوران جوڑے کے 4 بچے ہوئے جو گھر پہنچتے پہنچتے جوان ہوگئے۔شوق کا کوئی مول نہیں اور اپنی خواہش کی تکمیل میں انسان وہ کچھ کر جاتا ہے جس کا تصور بھی ناممکن ہوتا ہے۔ یہی ولولہ اور جنون حضرت انسان کو دیگر مخلوقات سے ممتاز کرتا ہے۔عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق ارجنٹائن کے ایک خاندان نے 25 جنوری 2000 میں ایڈوانچر کا آغاز کیا تھا جس کا ہدف دنیا بھر کا چکر لگانا تھا۔

سفر کا آغاز شادی شدہ جوڑے نے کیا تھا لیکن گھر واپسی 4 نوجوان بچوں کے ساتھ ہوئی۔5 براعظموں کے 102 ممالک کا چکر لگانے والے خاندان نے کُل 3 لاکھ 62 ہزار کلومیٹر سفر طے کیا اور واپس اس مقام پر پہنچے جہاں سے 22 سال قبل اس سفر کا آغاز کیا تھا۔53 سالہ ہیرمن اور 51 سالہ سینڈریلیا سفر کے آغاز کے وقت نوجوان تھے اور اس سفر کے دوران ان کے 4 بچے بھی ہوئے جن کی عمریں گھر پہنچتے پہنچتے 19، 16، 14 اور 12 سال ہوچکی ہے۔جوڑے کی پہلی اولاد امریکا، دوسری ارجنٹائن واپسی پر، تیسری کینیڈا اور چوتھی اولاد آسٹریلیا میں ہوئی تھی۔

متعلقہ آرٹیکلز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button